2019 March 20
یہ کون سا مذہب ہے جو مسجد اور نماز پر دھشتگردانہ حملہ جائز سمجھتا ہے؟
مندرجات: ١٧٨٤ تاریخ اشاعت: ١٣ December ٢٠١٨ - ١٩:٤٦ مشاہدات: 137
خبریں » پبلک
یہ کون سا مذہب ہے جو مسجد اور نماز پر دھشتگردانہ حملہ جائز سمجھتا ہے؟

بیانیہ میں مزید آیا ہے کہ تکفیری دھشتگرد اسلام اور انسانیت کے دشمن ہے اور انہوں نے ان مبارک ایام میں پاکستان اور افغانستان میں مسجد میں نمازیوں اور میلاد مبارک کے جشن منانے والوں کو دھشتگردی کا نشانہ بنا کر یہ ثابت کیا ہے کہ وہ کسی بھی دین و انسانیت کے پابند نہیں ہیں۔

عالمی اسمبلی نے ہفتہ وحدت کے دوران پاکستان اور افغانستان میں ہوئے حالیہ دھشتگردانہ حملوں کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ کون سا دین و مذہب ہے جس کی تکفیری وہابی ترویج کرتے ہیں اور اس کے تحت مسجد، نماز اور مذہبی رسومات کو دھشتگردانہ حملوں کا نشانہ بناتے ہیں؟
اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے مذمتی بیان میں آیا ہے کہ پیغمبر رحمت کی ولادت کے ایام جو محبت، مودت، امن و شانتی کا پیغام دیتے ہیں اور انہیں مسلمانان عالم ہفتہ وحدت کے عنوان سے یاد کرتے ہیں ان ایام میں اسی نبی کا کلمہ پڑھنے والوں کو دھشتگردی کا نشانہ بنانا کہاں کی انسانیت ہے؟
بیانیہ میں مزید آیا ہے کہ تکفیری دھشتگرد اسلام اور انسانیت کے دشمن ہے اور انہوں نے ان مبارک ایام میں پاکستان اور افغانستان میں مسجد میں نمازیوں اور میلاد مبارک کے جشن منانے والوں کو دھشتگردی کا نشانہ بنا کر یہ ثابت کیا ہے کہ وہ کسی بھی دین و انسانیت کے پابند نہیں ہیں۔
خیال رہے کہ کلایہ شہر میں نماز جمعہ کے دوران حوزہ علمیہ انوار المدارس کے سامنے دھشتگردوں نے نمازیوں کو دھشتگردی کا نشانہ بنا کر ۸۰ افراد کو شہید اور زخمی کیا جبکہ کابل میں ایک جشن پر کئے گئے حملے میں دسیوں افراد کو خاک و خوں میں غلطاں کیا گیا۔




Share
* نام:
* ایمیل:
* رائے کا متن :
* سیکورٹی کوڈ:
  

آخری مندرجات
زیادہ زیر بحث والی
زیادہ مشاہدات والی