2017 September 22
تفتان سرحد پر زائرین کو سکیورٹی کے نام پر پریشان کئے جانے کے خلاف شیعہ علماء کونسل پاکستان کا رد عمل
مندرجات: ٩٤٦ تاریخ اشاعت: ١٩ August ٢٠١٧ - ١٠:١١ مشاہدات: 32
خبریں » پبلک
تفتان سرحد پر زائرین کو سکیورٹی کے نام پر پریشان کئے جانے کے خلاف شیعہ علماء کونسل پاکستان کا رد عمل

اگر زائرین کی جان ومال کو کسی بھی قسم کا نقصان ہوا تو اس کی ذمہ داری وفاقی اور صوبائی حکومت پر عائد ہوگی۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ کراچی؛ شیعہ علماء کونسل پاکستان صوبہ سندھ کے نائب صدر و پولیٹیکل سیکرٹری محمد یعقوب شہباز کا صوبائی دفتر سے جاری بیان میں کہنا ہے کہ حکومت کا فرض بنتا ہے کہ وہ عوام کی جان ومال کے تحفظ کو یقینی بنائیں لیکن مسلسل بلوچستان حکومت زائرین امام حسین(ع) کو سیکیورٹی کے نام پر پریشان کررہی ہے اور یہ عمل گزشتہ کئی سالوں سے جاری ہے زائرین کی اس طرح تذلیل کسی بھی صورت ناقابل برداشت ہے حکومت بلوچستان کایہ اقدام تعصب پر مبنی نظر آتا ہے جس سے زائرین میں مایوسی پائی جاتی ہے اس وقت تین ہزار سے زائد زائرین تافتان بارڈر پر بے یارو مدد گار سڑکوں پربیٹھے ہیں جن کی سیکیورٹی کے لئے صوبائی حکومت نے کوئی بھی سنجیدہ اقدام نہیں کیا ہے ماضی میں بھی دہشت گردوں کی جانب سے اسی مقام پر دہشت گردی کے کئی دلخراش سانحات رونماء ہوچکے ہیں جس میں کئی سو افراد شہید اور زخمی بھی ہوئے لیکن حکومت ماضی سے بھی سبق نہیں سیکھ رہی اگر زائرین کی جان ومال کو کسی بھی قسم کا نقصان ہوا تو اس کی ذمہ داری وفاقی اور صوبائی حکومت پر عائد ہوگی قانون و انصاف کی بالادستی کے بغیر ملک میں امن وامان کا حقیقی قیام ممکن نہیں ہم آرمی چیف اور اعلیٰ حکام سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ کوئٹہ میں زائرین کے مسائل کے حل کے لئے مستقل بنیادوں پر سیکیورٹی کے اقدام کریں۔




Share
* نام:
* ایمیل:
* رائے کا متن :
* سیکورٹی کوڈ:
  

آخری مندرجات
زیادہ زیر بحث والی
زیادہ مشاہدات والی