2017 August 20
نابالغ بچے کے پیچھے نماز پڑھنے کی وہابیوں کی عجیب و غریب بدعت + کلپ
مندرجات: ٥٤ تاریخ اشاعت: ٢٤ July ٢٠١٦ - ١٦:٣١ مشاہدات: 336
وھابی فتنہ » پبلک
نابالغ بچے کے پیچھے نماز پڑھنے کی وہابیوں کی عجیب و غریب بدعت + کلپ

ایک کلپ، سوشل نیٹ پر گھوم رہی ہے جس میں ایک نابالغ بچے کی امامت میں تراویح پڑھی جارہی ہے۔ بچے کی امامت میں نماز پڑھنے کو لیکر یہ وہابیوں کی ایک نئی بدعت ہے۔
 
یہ پہلی بار نہیں ہے کہ ایک بچہ کو امام جماعت بنایا جارہا ہے۔ گزشتہ سال بھی ایک سات سالہ بچہ "عاصم بن حالد" کو جورڈن کی ایک مسجد میں امامت کے لئے کھڑا کردیا گیا تھا۔

اسی طرح کچھ عرصہ پہلے برطانیہ کی راجدھانی لندن کے "کیمڈن" علاقے میں نعیمہ نام کی ایک عورت کے پیچھے مردوں اور عورتوں نے نماز پڑھی۔ جبکہ اسلام میں مردوں کے لئے عورتوں کے پیچھے نماز پڑھنا حرام ہے۔

اس گمراہ فرقہ کی نماز جماعت میں اکثر نماز کو توڑ دیا جاتا ہے اور کہتے ہیں کہ کچھ منٹ رکیں اور پھر امام کسی کام پر چلا جاتا ہے اور مامومین نماز کی حالت میں کھڑے رہتے ہیں اور اپنا کام انجام دینے کے بعد امام پھر واپس آتا ہے اور نماز کو بیچ سے شروع کرتا ہے۔

متعلقہ کلپ دیکھنے کے لئے ضمیمہ فائل ملاحظہ کیجئے۔

 [٩٦٤١]



ضمیمہ فائلیں:
نماز به امامت کودک


Share
* نام:
* ایمیل:
* رائے کا متن :
* سیکورٹی کوڈ:
  

آخری مندرجات
زیادہ زیر بحث والی
زیادہ مشاہدات والی