2018 November 20
دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی پر علم امام حسین (ع)
مندرجات: ١٦٧٢ تاریخ اشاعت: ٢٤ July ٢٠١٨ - ١١:٥٠ مشاہدات: 57
خبریں » پبلک
دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی پر علم امام حسین (ع)

گلگت بلتستان سے تعلق رکھنے والے مشہور کوہ پیما محمد علی سدپارہ نے ایک بار پھر دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی کے ٹو پر علم حضرت امام حسین (ع) لہرا دیا۔

گلگت بلتستان سے تعلق رکھنے والے مشہور کوہ پیما محمد علی سدپارہ نے ایک بار پھر دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی کے ٹو پر علم حضرت امام حسین (ع) لہرا دیا۔

محمد علی سدپارہ نے یہ کارنامہ گذشتہ روز انجام دیا جب ان سمیت دنیا کے مختلف ممالک سے تعلق رکھنے والے 31 کوہ پیماؤں نے مشترکہ طور پر کے ٹو سر کرلی۔ اس سے پہلے سکردو سے تعلق رکھنے والے معروف کوہ پیما محمد علی سدپارہ نے مارچ 2016ء میں دنیا کی نویں بلند ترین چوٹی نانگا پربت پر بھی امام حسین (ع) کا علم لہرایا تھا، اس وقت محمد علی سدپارہ اور ان کی ٹیم نے سردیوں میں بغیر آکسیجن نانگا پربت سر کرنے کا ریکارڈ بھی قائم کیا تھا۔

واضح رہے کہ گذشتہ روز پاکستان اور غیر ملکی کوہ پیماؤں کی 31 رکنی ٹیم نے دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی کے ٹو سر کی تھی، ٹیم میں 4 پاکستانیوں سمیت آئرلینڈ، سوئٹزرلینڈ، میکسیکو، بیلجیئم اور جاپان کے کوہ پیما شامل تھے۔

گلگت بلتستان کے ضلع شگر میں واقع دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی کے ٹو 8611 میٹر بلند ہے، چاروں پاکستانی کوہ پیماؤں کا تعلق گلگت بلتستان سے ہے۔ اس وقت کے ٹو سر کرنے کی مہم میں مزید دو ٹیمیں سرگرم ہیں۔




Share
* نام:
* ایمیل:
* رائے کا متن :
* سیکورٹی کوڈ:
  

آخری مندرجات
زیادہ زیر بحث والی
زیادہ مشاہدات والی