2018 July 22
ایران اور اسرائیل کو مشترکہ دشمن قرار دینے سے آل سعود کا اصل چہرہ سامنے آگیا ہے، قاضی نیاز
مندرجات: ١٤٧٠ تاریخ اشاعت: ١٤ April ٢٠١٨ - ١٨:٢٩ مشاہدات: 58
خبریں » پبلک
ایران اور اسرائیل کو مشترکہ دشمن قرار دینے سے آل سعود کا اصل چہرہ سامنے آگیا ہے، قاضی نیاز

سعودی ولی عہد کی طرف سے ایران کو اسرائیل اور سعودی عرب کا مشترکہ دشمن قراردینے سے آل سعود کا اصل چہرہ کھل کر سامنے آگیا ہے اور واضح کرتا ہے کہ اس کے عزائم کیا ہیں۔

تسنیم خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق، وفاق المدارس الشیعہ پاکستان اور ملی یکجہتی کونسل کے مرکزی نائب صدر علامہ قاضی سید نیاز حسین نقوی نے کہا ہے کہ اسرائیل ناجائز طور پر فلسطین کی سرزمین پر قابض ہے۔ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کا اسرائیل کی حمایت میں امت مسلمہ کے 70 سالہ موقف کی توہین قابل مذمت ہے۔

 قائد اعظم محمد علی جناح نے اسرائیل کے قیام کی بھر پور مخالفت کی تھی۔ پاکستانی حکمرانوں کو سعودی عرب سے احتجاج کرنا چاہیے کہ مظلو م فلسطینی مسلمانوں کی جدوجہد کو نقصان نہ پہنچائیں۔

 اسرائیل کے خلاف ہر سال یوم القدس منا کر مسلمان اعلان کرتے ہیں کہ فلسطین فلسطینیوں کا ہے۔ اور امت مسلمہ اور ہر غیر ت مند شخص سمجھتا ہے کہ فلسطین کو آزاد مملکت کے طور پر رہنے کا حق ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اسرائیل کا قیام فلسطین کے سینے میں خنجر ہے۔ جس کی انسانی اور جمہوری سوچ رکھنے والے ہر صاحب بصیرت شخص نے مخالفت کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ محمد بن سلمان اپنے متنازع بیانات کے باعث مسلمانوں کے اجتماعی شعور او ر سیاسی حقوق کی نفی کررہے ہیں۔

 اگر اسرائیل کا حق فلسطین کی سرزمین پر تسلیم کرلیا جائے تو مسئلہ فلسطین کا وجود نہیں رہے گا اور نہ ہی فلسطینی یہ سب تسلیم کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ سعودی ولی عہد کی طرف سے ایران کو اسرائیل اور سعودی عرب کا مشترکہ دشمن قراردینا واضح کرتا ہے کہ اس کے عزائم کیا ہیں۔

مگر وہ شاید یہ بھول چکے ہیں کہ ایرانی قیادت کسی کی غلامی میں نہیں، اپنے فیصلے قرآنی تعلیمات اور مکتب اہل بیت کی جرات پر مبنی تاریخ کے مطابق کرتی ہے۔




Share
* نام:
* ایمیل:
* رائے کا متن :
* سیکورٹی کوڈ:
  

آخری مندرجات
زیادہ زیر بحث والی
زیادہ مشاہدات والی