2018 October 17
داعش کو بنانے کا مقصد صہیونیوں کو طاقتور بنانا ہے: امریکی سیاستدان
مندرجات: ١٣٥٥ تاریخ اشاعت: ٠٨ March ٢٠١٨ - ١٦:٥٦ مشاہدات: 84
خبریں » پبلک
داعش کو بنانے کا مقصد صہیونیوں کو طاقتور بنانا ہے: امریکی سیاستدان

ان خیالات کا اظہار امریکہ کی گرین پارٹی کے سنیئر رکن ‘میلس ہوگن’ جو امریکی کانگریس کے سابق نامزد امیدوار بھی تھے، نے ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا.

انہوں نے مزید کہا کہ داعش کو اس لئے بنایا گیا تا کہ ایران اور شام کو نقصان دینے کے ساتھ سعودیوں کی بالادستی میں اضافہ ہو اور خطے میں اسرائیل بھی مزید طاقتور بنے.

ان کا کہنا تھا کہ واشنگٹن اور ریاض دہشتگرد تنظیم داعش کے اصل حامی ہیں. اور اب اسرائیل اور سعودی عرب امریکی پشت پناہی کے ساتھ ایران کے خلاف صف بندیاں کررہے ہیں.

میلس ہوگن نے کہا کہ اسرائیل سالوں سے خطے میں امریکی مفادات کے لئےکام کرکرہا ہے. اسرائیل جاسوسی اور حساس معلومات کو اکٹھا کرنے کا مرکز ہے جہاں امریکہ اپنے ھتھیاروں اور بمب کا تجربہ کرتا ہے.

انہوں نے نیتن یاہو کی جانب سے ایران کو مشرق وسطی کے لئے بڑہ خطرہ قرار دینے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ اور نیتن یاہو دونوں خام خیالی کا شکار ہیں، ٹرامپ کا خیال ہے کہ وہ صرف وہی امریکہ کو نجات دلا سکتا ہے اور نیتن یاہو بھی سمجھتا ہے کہ وہ یہودیوں کاا واحد بادشاہ ہے جو پوری دنیا میں یہودیوں کی نمائندگی کررہا ہے.

امریکی سیاستدان نے مزید کہا کہ امریکہ کے حساس اداروں کو ٹرمپ کی ایران جوہری معاہدے سے ممکنہ علیحدگی پر تشویش ہے لہذا یہ بات ضروری ہے کہ اس عالمی معاہدے کو بچانے کے لئے امریکہ کے ریاستی اداروں کو کردار ادا کرنا پڑے گا.






Share
* نام:
* ایمیل:
* رائے کا متن :
* سیکورٹی کوڈ:
  

آخری مندرجات
زیادہ زیر بحث والی
زیادہ مشاہدات والی