2017 November 24
عائشہ اور حفصہ کے ذریعہ پیغمبر کی اذیت رسانی
مندرجات: ١٣٣ تاریخ اشاعت: ٢٢ November ٢٠١٦ - ١٧:٤٣ مشاہدات: 645
تصویری دستاویز » پبلک
عائشہ اور حفصہ کے ذریعہ پیغمبر کی اذیت رسانی

 

مسلم نیشاپوری عمر سے نقل کرتے ہوئے اس طرح سے لکھتے ہیں:

فَدَخَلْتُ عَلَى عَائِشَةَ فَقُلْتُ يَا بِنْتَ أَبِي بَكْر أَقَدْ بَلَغَ مِنْ شَأْنِكِ أَنْ تُؤْذِي رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم فَقَالَتْ مَا لِي وَمَا لَكَ يَا ابْنَ الْخَطَّابِ عَلَيْكَ بِعَيْبَتِكَ. قَالَ فَدَخَلْتُ عَلَى حَفْصَةَ بِنْتِ عُمَرَ فَقُلْتُ لَهَا يَا حَفْصَةُ أَقَدْ بَلَغَ مِنْ شَأْنِكِ أَنْ تُؤْذِي رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم وَاللَّهِ لَقَدْ عَلِمْتِ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم لاَ يُحِبُّكِ. وَلَوْلاَ أَنَا لَطَلَّقَكِ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم....

عمر کہتے ہیں: میں عائشہ کے پاس گیا، اور کہا : اے ابوبکر کی بیٹی تم نے یہاں تک انتہا کردی کہ پیغمبر اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو آزار دیتی ہو؟ عائشہ نے کہا: اے خطاب کے بیٹے: آپ کو مجھ سے کیا مطلب؟ آپ اپنی بیٹی کو نصیحت کریں؛ عمر کہتے ہیں: میں حفصہ کے پاس گیا اور کہا: کیا اب نوبت یہاں تک پہنچ گئی ہے کہ تم پیغمبر اکرم کو اذیت دیتی ہو؟ خدا کی قسم تم خود جانتی ہو کہ پیغمبر اکرم [صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ]تم سے محبت نہیں کرتے اور اگر میں نہ ہوتا تو تم کو اب تک طلاق دے چکے ہوتے۔۔۔۔

صحیح مسلم، ص 681

اہل سنت بھائیوں سے سوال:

1ـ عائشہ اور حفصہ رسول خدا صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو کیوں تکلیف پہنچاتی تھیں؟

کیا وہ نہیں جانتی تھیں کہ پیغمبر اکرم کو اذیت پہنچانا خدا کی لعنت کا سبب بنتا ہے؟

 

 





Share
* نام:
* ایمیل:
* رائے کا متن :
* سیکورٹی کوڈ:
  

آخری مندرجات
زیادہ زیر بحث والی
زیادہ مشاہدات والی