2018 August 15
شہید ڈاکٹر محمد علی نقوی کے دست راس انجینئر ممتاز رضوی کراچی سے لاپتہ
مندرجات: ١٢٦٥ تاریخ اشاعت: ٢٩ January ٢٠١٨ - ١٢:٥٨ مشاہدات: 114
خبریں » پبلک
شہید ڈاکٹر محمد علی نقوی کے دست راس انجینئر ممتاز رضوی کراچی سے لاپتہ

 شیعت نیوز: شہید ڈاکٹر محمد علی نقوی کے دست راس اور امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے سابقہ رکن مرکزی نظارت انجینئر ممتاز حسین رضوی ۲۳ جنوری سے لاپتہ کردئیے گئے ہیں۔ ممتاز رضوی کہ اہلِ خانہ نے ایس ایچ او سچل، کراچی کے نام درخواست میں لکھا ہے کہ وہ ۲۳ جنوری ۲۰۱۸ کو اپنے گھر سے کا م کے سلسلے میں گئے تھے جن کا تاحال کچھ پتا نہیں ۔ ممتاز رضوی کی اہلیہ نے درخواست میں لکھا ہے کہ ممتاز رضوی کئی سالوںسے کمپیوٹر اور اسکے پارٹس کے کاروبارسے منسلک تھے اور اس وقت وہ مقامی یونیورسٹی سے PHDبھی کر رہے ہیں ۔ واضح رہے کہ گزشتہ کئی عرصہ سے پاکستان میں ملت جعفریہ پاکستان کی مقتدر شخصیات کو ان کے گھر اور دفاتر سے اُٹھا کر لاپتہ کیا جا رہا ہے جس کے بارے میں ملت جعفریہ اور پاکستان میں کام کرنے والی شیعہ تنظیمیں اسکے خلاف احتجاجی تحریک بھی چلا چکی ہیں جبکہ اس وقت تک کے اعداد و شمار کے مطابق ۸۰ سے زائد علماء ، دانش ور اور عزادار لاپتہ ہیں جن کہ بارے میں تا حال کچھ پتہ نہیں ۔ ملت جعفریہ پاکستان نے آرمی چیف اور چیف جسٹس آف پاکستان سے اپیل کی ہے کہ وہ ان انسانی حقوق کی پامالی کا نوٹس لیں اور اگر ملت کے کسی فرد کا کوئی مسئلہ ہے تو اسے قانونی حراست میں لے کر اس کےخلاف کاروائی کی جائے ۔




Share
* نام:
* ایمیل:
* رائے کا متن :
* سیکورٹی کوڈ:
  

آخری مندرجات
زیادہ زیر بحث والی
زیادہ مشاہدات والی