2017 December 12
پاکستان میں داعش کی زمینہ سازی، مسرور جھنگوی کا نام شیڈیول 4 سے خارج
مندرجات: ١١٠٠ تاریخ اشاعت: ٠٥ November ٢٠١٧ - ١٢:٤٩ مشاہدات: 17
خبریں » پبلک
پاکستان میں داعش کی زمینہ سازی، مسرور جھنگوی کا نام شیڈیول 4 سے خارج

پاکستانی سر زمین پر داعش کی آمد کے لئے ہموار کی جا رہی ہے ، محکمہ داخلہ پنجاب نے گزشتہ سال پی پی 78 جھنگ سے ضمنی انتخاب میں منتخب ہونیوالے رکن پنجاب اسمبلی اور کالعدم لشکر جھنگوی رہنماء مسرور نواز جھنگوی کا نام فورتھ شیڈول

شیعت نیوز:پاکستانی سر زمین پر داعش کی آمد کے لئے ہموار کی جا رہی ہے ، محکمہ داخلہ پنجاب نے گزشتہ سال پی پی 78 جھنگ سے ضمنی انتخاب میں منتخب ہونیوالے رکن پنجاب اسمبلی اور کالعدم لشکر جھنگوی رہنماء مسرور نواز جھنگوی کا نام فورتھ شیڈول لسٹ سے نکال دیا ہے، مسرور جھنگوی کا نام 2014ء میں دہشتگرد اور کالعدم تنظیموں سے مبینہ روابط کی بنیاد پر انسداد دہشتگردی ایکٹ 1997ء کے تحت فورتھ شیڈول میں شامل کیا گیا تھا۔ مسرور نواز جھنگوی نے محکمہ داخلہ پنجاب کے اس اقدام کیخلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں رٹ دائر کر رکھی تھی جس کی سماعت آئندہ پیر کو ہوگی۔ محکمہ داخلہ کی پالیسی کے مطابق کسی شخص کا نام فورتھ شیڈول لسٹ میں شامل ہونے کے 3 سال بعد نکالا جا سکتا ہے۔ محکمہ داخلہ نے مسرور نواز جھنگوی کو مطلع کر دیا تھا کہ ان کا نام فورتھ شیڈول لسٹ سے نکال دیا گیا ہے تاہم وہ محکمہ داخلہ سے تحریری احکامات چاہتے تھے۔ محکمہ داخلہ کے حکام پیر کے روز اسلام آباد ہائیکورٹ میں اس حوالے سے اپنی رپورٹ پیش کر دیں گے۔ دوسری جانب ذرائع نے شیعت نیوز کوبتایا ہے کہ مسرور نواز جھنگوی کو مولانا فضل الرحمان نے پیشکش کی تھی کہ اگر وہ جے یو آئی (ف) جوائن کرلیں تو ان کا نام فورتھ شیڈول سے نکلوا دیا جائے گا اور ان کیخلاف درج کئے گئے مقدمات بھی ختم کروا دیئے جائیں گے۔ ذرائع کے مطابق مسرور نواز جھنگوی نے پنجاب اسمبلی باقاعدہ ڈکلیئر کر دیا تھا کہ وہ جے یو آئی (ف) کے رکن اسمبلی ہیں۔ مسرور نواز کے جے یو آئی میں شامل ہونے کے بعد مولانا فضل الرحمان نے شہباز شریف سے سفارش کی تھی جس کے بعد مولانا مسرور جھنگوی کا نام فورتھ شیڈول فہرست سے نکال دیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ پنجاب میں موجود ابنِ زیاد کی حکومت کالعدم تنظیموں اور ان کے ذمہ داران کو ہر ممکنہ مدد فراہم کر رہی ہے، اور سرزمین پاکستان پر داعش کے لئے زمینہ سازی میں بھی مدد فراہم کر رہی ہے۔




Share
* نام:
* ایمیل:
* رائے کا متن :
* سیکورٹی کوڈ:
  

آخری مندرجات
زیادہ زیر بحث والی
زیادہ مشاہدات والی